Chitral Times

Jul 6, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیر اعلیٰ‌اور سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی نے پکڑے گئے نایاب عقاب کھلی فضاء میں آزاد کردئیے

Posted on
شیئر کریں:

پشاور(چترال ٹائمز رپورٹ ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبے کی مختلف چیک پوسٹوں پر محکمہ وائلڈ لائف کی جانب سے پکڑے گئے گیارہ نایاب عقاب آج وزیر اعلیٰ ہاوس پشاور میں اپنے ہاتھوں سے کھلی فضاء میں آزاد کر دیئے۔ یہ نایاب عقاب پچھلے روز محکمہ وائلڈ لائف کی طرف سے سمگلنگ کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے وائلڈ لائف فورس نے صوبے کے مختلف اضلاع سے دھر لئے تھے ، ڈی ایف اووائلڈ لائف نے بتایا کہ سمگلروں کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ان نایاب پرندوں میں آٹھ کو ڈی ایف او پشاور نے پکڑا جبکہ تین پرندوں کو ڈی ایف او بنوں نے ڈیرہ اسماعیل خان سے پکڑا جن کو بعد میں وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور منتقل کیا گیا تاکہ وزیر اعلیٰ اپنے ہاتھوں سے ان قیمتی عقابوں کو آزاد کر دیں۔اس موقع پر چیف کنزرویٹر وائلڈ لائف نے بتایا کہ ان عقابوں کی مالیت کروڑں روپے میں بنتی ہے۔ اس موقع پر محمود خان نے محکمہ جنگلی حیات کے عملے کو سراہتے ہوئے بتایا کہ یہ نایاب پرندے ماحول میں خوبصورتی پیدا کرتے ہیں اور ان کی سمگلنگ اور شکار قانوناً جرم ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے نایاب پرندوں کی موجودگی سے قدرتی ماحول میں نکھار پیدا ہوتا ہے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اس طرح کے غیر قانونی کاموں کی بیخ کنی انتہائی ضروری ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی ،وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ، ایم پی اے اجمل وزیر اور دیگر اعلیٰ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

دریں‌اثنا سپیکر خیبر پختون خواہ اسمبلی مشتاق غنی نے کہا ہے کہ جنگلی حیات کا تحفظ حکومت کا فرض ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ عوام اس امر میں ہمارا ساتھ دیں ان خیالات کا اظہار صوبائی اسمبلی سکریٹریٹ میں منعقد کردہ عقاب آذاد کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا. صوبائی وزیر برائے ماحولیات محمد اشتیاق ارمڑ، صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی اور صوبائی وزیر قانون سلطان محمد خان بھی اس موقع پر ہمراہ تھے. سپیکر صوبائی اسمبلی مشتاق غنی نے کہا کہ ہمارے ملک میں جنگلی حیات کے تحفظ کی آج تک باقاعدہ پالیسی نہیں بنائی گئی جس وجہ سے بہت سی قیمتی جنگلی اجناس کی نسلیں ناپید ہوتی جا رہی ہیں، حکومت خیبر پختون خواہ نے اپنے گزشتہ پانچ سالوں میں بھی اس شعبے میں کافی کام کیا جس سے ان مسائل پر کافی حد تک قابو پا لیا گیا اور آئندہ بھی ہم اس شعبے میں موثر اقدامات اٹھانے کے لیے پرعزم ہیں. مشتاق غنی نے کہا کہ امید کرتے ہیں کہ حکومت کو عوام کی طرف سے بھرپور تعاون ملے گا کیونکہ یہ ملک ہم سب کا ہے اور اسی ملک کی بدولت ہماری دنیا میں پہچان ہے لحاظہ اس خطے کی فلاح میں اٹھائے جانے والے اقدامات میں آپ سب جب تک ہمارے شانہ بشانہ کھڑے نہیں ہو گے تب تک ہم کوئی خاص نتائج حاصل نہیں کر پائیں گے.


شیئر کریں: