Chitral Times

Apr 21, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

آسیہ مسیح کی رہائی کے خلاف اہلسنت ولجماعت اورایم ایم اے کے زیراہتمام چترال میں احتجاجی مظاہرہ

شیئر کریں:

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز ) آسیہ مسیح کو بری کرنے کے خلاف چترال میں متحدہ مجلس عمل اور جماعت اہل سنت والجماعت چترال نے مشترکہ طور پر ایک احتجاجی جلسہ منعقد کیا جس سے حافظ خوش ولی خان، قاری عبدالرحمن قریشی، مولانا جمشید احمد، مولانا اسرار الدین الہلال، مولانا عبدالشکور، ایم پی اے مولانا ہدایت الرحمن، سابق ایم پی اے مولانا عبدالرحمن، مولانا سلامت اللہ قاضی، مولانا عبدالسمیع ، مولانا محمد عمر قریشی، مولانا جاوید الرحمن ، مفتی شفیق اور دوسروں نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اس فیصلے سے مسلمانوں کی دل ازاری ہوئی ہے جسے وہ برداشت نہیں کریں گے۔ اتالیق چوک میں واقع اس جلسے کے مقرریں نے کہاکہ ناموس رسالت پر کوئی مسلمان سمجھوتہ نہیں کرسکتا اور عشق رسول ہر مسلمان کی ایمان کا لازمی جز ہے اور یہ سلسلہ قیامت تک جاری رہے گا اور جب بھی اورجہاں بھی شان رسالت میں گستاخی کا ارتکاب کرنے کی ناپاک جسارت کرے ، تو ان کے تن میں آگ لگ جاتی ہے ۔ا نہوں نے کہاکہ پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیا تھا اور یہاں شعائر اسلام کے ساتھ مذاق اور شان رسالت کے خلاف بات اور فعل کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ مقررین نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ اس حساس معاملے میں مسلمانوں کے جذبات کے ساتھ کھیلنے کی کوشش کی جارہی ہے اور وزیر اعظم عمران خان کی نشری تقریرزخم پر نمک پاشی سے کم نہیں۔ مقرریں نے مظاہرین سے پر آمن رہنے اور احتجاج کے دوران سرکاری یا پرائیویٹ املاک کونقصان پہنچانے سے گریز کرنے اور ایسے ملک دشمن عناصر پر کڑی نظر رکھنے کی بھی استدعا کی جو عشق رسول ؐ کے نام پر ملک میں انتشار پھیلانے کی کوشش کرتے ہیں۔
دریں اثنا دروش ، ریشن ودیگر مقامات پر بھی پرامن احتجاجی مظاہرہ ریکارڈ کیاگیا . اور اسیہ مسیح کے مقدمے کی دوبارہ نظرثانی کا مطالبہ کیا گیا .


شیئر کریں: