Chitral Times

Sep 23, 2018

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

  • کیمسٹ برادری کی ہڑتال یقین دہانی پر وقتی طور پر ختم کردیا گیا ،میڈیکل سٹور کھول دیےگئے

    May 9, 2018 at 10:07 pm

    ترال (نمائندہ چترال ٹائمز ) گزشتہ تین دنوں سے جاری کیمسٹوں کی شٹرڈاون ہڑتال وزیر اعلیٰ کے مشیر شکیل خان کی طرف سے اس یقین دہانی پر واپس لیا گیا کہ چیف منسٹر تین دنوں کے اندر اندر ڈرگ رولزمیں ترمیم کو واپس لیں گے ۔ بٹ خیلہ میں پاکستان کمیسٹس اینڈ ڈرگسٹس ایسوسی ایشن کی صوبائی اور ڈویژنل قیادت کے ساتھ ایک نشست میں شکیل خان نے یقین دہانی کرانے پر ایسوسی ایشن نے واپس لینے کا اعلان کیا ۔ تاہم اس بات پر بھی زور دیا گیا کہ تین دنوں کے اندر اندر ترمیم واپس نہ لینے کی صور ت میں کیمسٹ برادری صوبہ گیر ہڑتال کرے گی ۔ اس موقع پر ایسوسی ایشن کے صوبائی چیرمین اسماعیل خان اور ڈویژنل صدر خیر الرحمن کے علاوہ صوبائی فنانس سیکرٹری عطاء اللہ شاہ اور دیگر بھی موجود تھے جنہوں نے مذاکرات میں حصہ لیا۔ ایسوسی ایشن کی ضلعی قیادت نے چترال میں میڈیکل اسٹور اس اعلان کے فوراً بعد کھول دئیے گئے۔

    دریں اثنا ڈرگ رولز میں وزیر اعلیٰ کی طرف سے ترمیم اور میڈیکل اسٹور چلانے کے لئے فارمیسی کٹیگری بی سرٹیفیکیٹ کو لازمی قرار دینے کے خلاف کیمسٹ برادری کی ہڑتال تیسرے دن میں داخل ہوگئی تھی جس کے ساتھ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال میں او پی ڈی اور داخل مریضوں کو ادویات کے حصول میں سخت مشکل کا سامنا کرنا پڑا۔ ضلعے کے مختلف علاقوں سے آمدہ خبر کے مطابق بونی، مستوج، ارندو، شاگرام اور ایون کے علاوہ دوسرے چھوٹے ہیلتھ کیر یونٹوں میں بھی ادویات کی عدم دستیابی کا مسئلہ عوام کو درپیش رہا۔ ادھر پاکستان کیمسٹس اینڈ ڈرگسٹس ایسوسی ایشن چترال کے رہنماؤں نے مطالبے کی منظوری تک ہڑتال کو برقرار رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا تھا اور چترال پریس کلب کے سامنے دھرنا جاری رکھا۔ مختلف سیاسی اور سول سوسائٹی تنظیموں کے رہنماؤں کا بدھ کے دن بھی آنے اور ہڑتال کیمسٹوں سے اظہاریکجہتی کا سلسلہ جاری رہا جن میں ایم پی اے سلیم خان ، پی پی پی کے رہنما انجینئر فضل ربی جان اور پی ٹی آئی رہنما عبدالولی خان عابد ایڈوکیٹ جبکہ ڈرائیورز یونین کے صابر احمد صابر اور دوسرے شامل تھے۔

  • error: Content is protected !!