Chitral Times

Sep 16, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

انجمن ترقی کھوار، کھواراہل قلم اور مئیر کے اشتراک سے چترال میں مادری زبانوں کا عالمی دن منایا گیا

شیئر کریں:

چترال( محکم الدین ) انجمن ترقی کھوار حلقہ چترال ، کھواراہل قلم اور مئیرتنظیم کے اشتراک سے مادری زبانوں کے عالمی دن کی مناسبت سے ضلع کونسل ہال چترال میں پروگرام منعقد ہو ا ، جس میں لینڈ سٹلمنٹ آ فیسرسید مظہر علی شاہ مہمان خصوصی اور الخدمت فاؤنڈیشن چترال کے صدر نوید احمد بیگ صدر محفل تھے ۔ جبکہ دیگر اعزازی مہمانوں میں معروف دانشور ڈاکٹر عنایت اللہ فیضی ، ممتاز قانو ن دان عبد الولی ایڈوکیٹ ، معروف محقق پروفیسر شمس النظر فاطمی ، ادیب و شاعر ذاکر محمد زخمی اور مسرت بیگ مسرت شامل تھے ۔ حسن بصری حسن نے سٹیج کے فرائض انجام دی ، جبکہ صدر انجمن حلقہ چترال محمد نواز رفیع نے شرکاء کو خوش آمدید کہا ۔ عمران خان گجر نے گجری زبان پر اپنا مقالہ پڑا ۔ اور کہا ۔ کہ پاکستان میں تقریبا پانچ لاکھ لوگ گجری زبان بولتے ہیں۔ اور کئی ممتاز شخصیات جن کا قیام پاکستان میں اہم کردار تھا۔ اس زبان کے بولنے والے تھے ۔ چترال میںیہ دوسری بڑی زبان ہے ۔ جس کے بولنے والے چترال کے تمام علاقوں میں کم یا زیادہ تعداد میں موجود ہیں ۔ عمران کبیر ممبر ڈسٹرکٹ کونسل نے کلاشہ زبان کی اہمیت پر روشنی دالی ۔ اور کہا ۔ کہ یہ زبان تقریبا چھ ہزار سال پرانی ہے ۔ اور اس میں پچاس سے زیادہ آدائیگی کیلئے صوت موجود ہیں ۔ اور چترال کی کئی زبانیں اس کی کوک سے جنم لے چکی ہیں ۔ کالاشوار پر کام ہو رہا ہے ۔ اس پر مزید تحقیق سے کئی انکشافات ہو سکتے ہیں ۔ اور کالاشوارکو عالمی سطح پر پذیرائی ملی ہے ۔ ظفر اللہ پرواز نے اس خدشے کا اظہار کیا ۔ کہ کھوار جو گلگت اور چترال بھر میں بولی جاتی ہے ۔ یہ بھی معدومیت کے خطرے سے دوچار ہے ۔ کھوار کو پذیرائی نہیں دی جاتی رہی ۔ یہی وجہ ہے ۔ کہ ممتاز صوفی شاعر بابا سیر نے بھی کھوار سے زیادہ فارسی میں شاعری کی ۔ عبداللہ نے گواربتی زبان اور حمیدالدین نے یدغہ زبان کے حوالے سے اپنے مقالات پڑے ۔ اور دونوں نے کہا ۔ کہ مختلف اداروں کے تعاون سے ان زبانوں کو معدوم ہونے سے بچانے کیلئے جدو جہد جاری ہے ۔ عبدالولی خان ایڈوکیٹ نے اپنے خطاب میں اس بات پر افسوس کا اظہار کیا ۔ کہ کھوار بولنے والے دوسرے لوگوں کے سامنے اپنی زبان بو لنے کو معیوب سمجھتے ہیں ، جبکہ کھوار ایک وسیع اور اپنے اندر دیگر زبانوں کو جذب کرنے کی اہلیت رکھتا ہے ۔ جو بعض لسانی محققین کے نزدیک زبان کی وسعت کی خوبی قرار دی گئی ہے ۔ انہوں نے فنکاروں کی عزت و تکریم پر زور دیا ۔ ممتاز دانشور ڈاکٹر عنایت اللہ فیضی نے کہا ۔کہ اللہ تعالی نے آدم علیہ السلام کو فرشتوں سے اونچا مقام اس لئے دیا ۔ کہ اُنہیں چھ ہزار زبانوں کا علم عطا فرمایا گیا تھا ۔ جو فرشتے نہیں جانتے تھے ۔ اور اللہ نے زبان کو انعام کے طور پر ذکر کیا ہے ، زبان کی اہمیت کا اندازہ اسی سے ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہمیں زبانوں کے تحفظ کیلئے حکومت کی طرف دیکھنے کی بجائے خودکام کرنے کیلئے تیار ہونا چاہیے ۔ مہمان خصوصی سید مظہر علی شاہ نے کہا ۔ کہ زبان ہماری شناخت ہے ، اور ہماری زبان اور علاقے کی پہچان یہ ہے ۔ کہ ہمارے پچاس فیصد مسائل چترال کے نام اور زبان کی وجہ سے حل ہوتے ہیں ۔ اور لوگ احترام دیتے ہیں ۔ انہوں نے چترال کی ادبی انجمنوں کی یکجا ہوکر زبان و ادب کی ترقی کیلئے خدمات کی تعریف کی ۔ جبکہ صدر محفل نواید احمد بیگ نے کہا ۔ کہ دنیا میں 5912زبانیں بولی جاتی ہیں ، جن میں سے 516مادری زبانیں دُنیا سے مٹ چکے ہیں اور دنیا میں 36 فیصد زبانیں معدومیت کے خطرے سے دوچار ہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ بیرونی زبانیں اور کلچر ہماری زبان پر حاوی ہو رہی ہیں ۔ ان کامقابلہ کرنے کیلئے باہمی تعاون اور کام کی اشد ضرورت ہے ۔ اس موقع پر کئی قرادادیں منظور کی گئیں ۔ جن میں صوبائی اسمبلی میں منظور شدہ بل کے تحت بارہویں جماعت تک مادری زبانوں کی تعلیم پر عمل درآمد ، خیبر پختونخوا میں لینگویج پروموشن اتھارٹی کو فعال بنانے ، گورنمنٹ کالاش پرائمری سکولوں میں کالاش اساتذہ کے ذریعے کالاش زبان پڑھانے ، سرکاری سکولوں کی طرح پرائیویٹ سکولوں میں کھوار نصاب پڑھانے اور پاکستان ٹیلی وژن میں کھوار کو بھی موقع دینے کا مطالبہ کیا گیا ۔ پروگرام کے اختتام پر کلاشوار ، کھوار اور دیگر زبانوں میں کلچر شو پیش کئے گئے ۔
international languages day celebrated in Chitral 3
international languages day celebrated in Chitral 1
international languages day celebrated in Chitral 6 international languages day celebrated in Chitral 7 international languages day celebrated in Chitral 8 international languages day celebrated in Chitral 10 international languages day celebrated in Chitral 9
international languages day celebrated in Chitral 14 international languages day celebrated in Chitral 2 international languages day celebrated in Chitral 5
international languages day celebrated in Chitral 12

شیئر کریں: