Chitral Times

Mar 1, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال کے برف سے ڈھکے علاقوں میں برفانی تودے گرنے کا شدید خطرہ ہے۔۔۔پی ایم ڈی

Posted on
شیئر کریں:

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) محکمہ موسمیات پاکستان (PMD) کی ایک خصوصی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کوہ ہندکش سلسلہ میں 6.2 شدت کے زلزلے کے باعث کم شدت کے آفٹر شاکس (زلزلے) آنے کی توقع ہے۔ اسی دوران چترال کے شمال مغربی حصوں میں برف باری بھی ہورہی ہے ۔اس لئے آفٹر شاکس کے باعث ہندوکش کے برف سے ڈھکے علاقوں میں برفانی تودے گرنے کا شدید خطرہ ہے۔ ڈپٹی کمشنر چترال کو ضلع کے برفانی علاقوں میںآئندہ برفانی تودے کے خطرات سے نمٹنے کے لئے احتیاطی تدابیر اٹھانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر دورش کی گذشتہ روز جاری کردہ رپورٹ کے مطابق پی ٹی سی ایل کے تین ملازمین وادی نگر دروش میں PTCL ٹاور کی چیکنگ کے لئے لواری ٹاپ کو آتے ہوئے ایک برفانی تودے کی زد میں آگئے جن میں سے ایک فرد کو بچالیاگیا جبکہ دو (۲) ابھی تک لاپتہ ہیں ۔ اربن سرچ ایند ریسکیو اور(USAR) کی ٹیم کے آٹھ ممبران ،برف باری سے ڈھکے علاقے میں ریسکیو آپریشن کے لئے مخصوص آلات سے آراستہ کرکے مردان سے روانہ کردیئے گئے ہیں۔ USAR ٹیم ،ضلع چترال پہنچ گئی ہے اور آپریشن بھی آج سے شروع کردیاگیاہے جبکہ PDMA مزید تعاون اورمزید ممکن معاونت کی فراہمی کے لئے ضلعی انتظامیہ سے رابطے میں ہے۔31جنوری کے زلزلے کے بارے میں PDMAکی تازہ رپورٹ کے مطابق ضلع پشاور میں ابتدائی نقصانات میں گرلز سکول لنڈی ارباب (DDMO ) پشاور میں خوف و ھراس کی صورتحال پیدا ہونے پر سکول کی چار بچیاں معمولی زخمی ہو گئیں جبکہ ضلع سوات میں ایک مقامی ہوٹل میں ایک مہمان عمات میں زلزلے کے جھٹکے لگنے سے دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گیا۔رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ PDMA ،ضلعی انتظامیہ کے ساتھ قریبی رابطے میں ہے اور ابھی تک پورے صوبے میں کسی سنگین جانی و مالی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔
pdma notice for chitral

شیئر کریں: