Chitral Times

Jan 25, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چیف سیکریٹری/ انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات کی صوبے کے پانی ٹینکوں کو صاف کرنے کی ہدایت

شیئر کریں:

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا محمد اعظم خان نے محکمہ ہائے پبلک ہیلتھ انجینئرنگ اور بلدیات و دیہی ترقی کے سیکرٹریوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ صوبہ بھر میں پانی سپلائی کرنے والی ٹینکیوں کو کلورین کے ذریعے جراثیم سے پاک کرنے اور تمام زنگ آلود پائپوں کو تبدیل کرنے کیلئے فوری طور پر ایک جامع مہم چلائیں اور مہم کی پراگرس کو روزانہ کی بنیاد پر پرفارمنس مینجمنٹ اینڈ ریفامز یونٹ کے ذریعے انہیں بجھوایا کریں۔ ان محکموں کے سیکرٹریوں کو مزید ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ضلعی انتظامیہ ، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کے ضلعی دفاتر اور تحصیل میونسپل ایڈ منسٹریشنوں کے ذریعے تمام اضلاع میں مربوط مہم چلائیں اور تمام سرکاری سکیموں سے عوام کومہیا کئے جانے والے صاف اورحفظان صحت کے مطابق پانی کی فراہمی یقینی بنائیں۔متعلقہ محکموں کے حکام کو مزید کہا گیا ہے کہ وہ تمام بوسیدہ اور زنگ آلودہ پائپ لائنوں کی تبدیلی کو ایمر جنسی بنیادوں پر تبدیل کرنے کیلئے اقدامات کریں جبکہ ٹینکیوں کی صفائی اور کلورنیشن کے عمل کو21 دنوں کے اندرمکمل کرنے کی ہدایت دی گئی ۔ تمام ذمہ دار افسران کو پی ایم آر یو (PMRU ) کے ذریعے بجھوائے گئے پروفارمہ کے ذریعے حکومت کو بروقت سرٹیفیکیٹ فراہم کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔

دریں اثنا انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات خیبرپختونخوا نے تمام جیل سپرنٹنڈنٹس کو ہدایات جاری کی ہے کہ وہ جیلوں میں قیدیوں اورسٹاف ممبران کو پینے کاصاف پانی مہیاکرنے کے لئے ایک ہفتے کے اندر اندر تمام ضروری اقدامات اٹھائیں۔ نیز پانی کی ٹینکی کی بھی صفائی کی جائے تاکہ قیدیوں اورسٹاف ممبران کو صاف پانی مہیا ہوسکے۔ سپرنٹنڈنٹس جیل کو مزید تاکید کی گئی ہے کہ پانی کی صفائی کے لئے ہر 3 ماہ بعد ضروری اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ قیدیوں اوردیگر سٹاف ممبران ،پانی سے پیداہونے والے امراض سے بچ سکیں ۔ان امور کا اعلان انسپکٹر جنرل جیل خانہ جات خیبرپختونخو اکے دفتر سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں کیاگیا۔


شیئر کریں: