Chitral Times

Jan 30, 2023

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

تین روزہ چھٹی عالمی ہندکو کانفرنس 8ستمبر سے شروع ہو گی

Posted on
شیئر کریں:

’’خیر نال آؤ تے جم جم آؤ‘‘ کانفرنس میں100 کتابوں کی مشترکہ رونمائی کی تقریب بھی منعقد ہو گی

پشاور(چترال ٹائمز رپورٹ)گندھارا ہندکو بورڈاور گندھارا ہندکو اکیڈمی پشاورکے زیر اہتمام تین رورہ چھٹی عالمی ہندکو کانفرنس جمعہ سے شروع ہو گی۔تین روزہ عالمی ہندکو کانفرنس کے پہلے دوایام گندھارا ہندکو اکیڈمی کے احمد علی سائیں ہال،2 چنار روڈ، آبدرہ، یونیورسٹی ٹاؤن پشاور جبکہ تیسرے روز یعنی 10 دسمبر کو کانفرنس کی کارروائی آرکائیوز ،لائبریری ہال پشاور میں صبح 9 بجے سے شروع ہو گی۔کانفرنس کا موضوع ’’ہند آریائی تے پاکستانی زباناں دی ترقی تے فروغ دے ذریعے قومی یکجہتی دا حصول‘‘ رکھا گیا ہے۔اس کانفرنس کے میزبان اعلی محترم اعجاز احمد قریشی ،چےئرمین گندھارا ہندکو بورڈ پشاور ہیں ۔کانفرنس کے کنوینئر گندھارا ہندکو بورڈ کے جنرل سیکرٹری اور گندھارا ہندکو اکیڈمی کے چیف ایگزیکٹیو کمیٹی محمد ضیاء الدین ہیں۔کانفرنس میں گورنر خیبر پختونخوا انجینئر اقبال ظفر جھگڑا ور وزیراعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک کے علاوہ دیگر معزز وزراء کرام اور صوبائی حکام اعلی خصوصی طور پر شرکت کرینگے۔ اس موقع پر ایک سال کے قلیل وقت میں گندھارا ہندکو اکیڈمی کی طرف سے شائع شدہ 100 کتابوں کی عظیم الشان تقریب رونمائی بھی ہو گی جو کہ ایک عالمی ریکارڈ ہے۔ان 100 کتب میں ہر موضوع پر کتابیں شامل ہیں۔کانفرنس کے حوالے سے گندھارا ہندکو بورڈ کے سینئر وائس چےئرمین ڈاکٹر عدنان گل، وائس چےئرمین ڈاکٹر صلاح الدین اور جنرل سیکرٹری محمد ضیاء الدین نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا کہ چھٹی عالمی ہندکو کانفرنس کا مقصد قومی یکجہتی کو فروغ دینا ہے ۔ کانفرنس ہندکو زبان کی ترقی کے حوالے سے سنگ میل ثابت ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی ہندکو کانفرنس کے انعقاد سے ہندکو اور پاکستانی زبانوں کو فروغ ملے گا ۔اس کانفرنس میں امریکہ، برطانیہ، کینیڈا، ترکی، ملائیشیا، دبئی اور دنیا کے دیگر ممالک سے سکالرز ڈاکٹرسید امجد حسین، آفتاب اقبال بانو ،ڈاکٹر حلیل طوقار ،ڈاکٹر نسیم اشرف ،قدسیہ قدسی ،کریم اﷲ قریشی، ڈاکٹر عبدالوحید کے علاوہ پاکستان کے چاروں صوبوں ،گلگت بلتستان ،آزاد کشمیر کے محققین اور ماہرین لسانیات بھی شرکت کرینگے اور اپنے مقالہ جات پیش کرینگے۔ جبکہ اس کے ساتھ ساتھ ، ثقافتی نمائش ،ہندکولوک موسیقی ،ہندکو کتب کی نمائش اور خصوصی ڈاکیو منٹری فلم اور ہندکو ڈرامے پیش کئے جائینگے۔اس کانفرنس کے دوران کانفرنس کی تھیم کے حوالے سے خصوصی مذاکرے بھی منعقد ہونگے۔کانفرنس میں ہندکو موسیقی کے حوالے سے رنگا رنگ تقریب منعقد ہو گی جس میں ہندکو فنکار ہندکو لوک گیت پیش کرینگے ۔ ان فنکاروں کا تعلق صوبے کے مختلف علاقوں سے ہے۔ شرکاء اس موقع پر کوہاٹی، ہزاروی اور ہندکو کے دیگر لہجوں میں گانوں سے محظوظ ہونگے۔ کانفرنس میں احمد علی سائیں، سائیں غلام دین ہزاروی ،سائیں غلام فقیر کے کلام پیش کئے جائینگے اس کے علاوہ شرکاء قوالی کی سنگت میں عارفانہ کلام سے بھی محظوظ ہونگے۔

یادرہے کہ ان 100کتابوں میں چترال کی خاتون شاعرہ فریدہ سلطانہ فری کی کتاب ژانو دشمن کی بھی رونمائی ہوگی ۔


شیئر کریں: