Chitral Times

Dec 5, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال سے مینڈیٹ نہ ملنے کے باوجود اربوں کے پرمنصوبے شروع کئے- ایم پی اے بی بی فوزی

Posted on
شیئر کریں:

چترال ( بشیر حسین آزاد )چترال کو اے سازش کے تحت پسماندہ رکھا گیا ‘ ماضی کے عوامی نمائندوں نے چترال کی ترقی کی بجائے اپنے بنک بیلنس کو برھایا ‘ جبکہ چترال سے پی ٹی آئی کو مینڈیٹ نہ ملنے کے باوجود مختصر عرصہ میں اربوں کے پرمنصوبے شروع کئے جو پی ٹی آئی کی چترال سے محبت کی مثال ہے ‘ جبکہ دیگر پارٹیوں نے چترالی عوام کو شخصیات کے ناموں پر دھوکہ دیاہے ‘ لیکن اب ایسا نہیں ہوگا‘ان خیالا ت پاکستان تحریک انصاف چترال کے رہنماؤں ممبر صوبائی اسمبلی اور پارلیمانی سیکرٹری بی بی فوزیہ ‘پی ٹی آئی کے ضلع چترال صدر عبدالطیف اور دیگر نے اپر چترال کے علاقے پرواک میں شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ‘ گزشتہ روز پاکستان تحریک انصاف مستوج پرواک کے زیراہتمام ایک بہت بڑاعوامی اجتماع منعقد ہوا جس میں خواتین و حضرات کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ اور درجنوں افرادجن میں حاصل مراد ، شاہد ، شفقت ، کونسلر حمید اللہ اور خاتون کونسلر بی بی ساحرہ نے 200خواتین کے ساتھ دیگر بہت بڑی تعداد نے پاکستان پیپلز پارٹی سے مستعفی ہو کر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا ۔ جبکہ زبردست خان نے مسلم لیگ (ن) سے مستعفی ہو کر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی ۔اجتماع سے خطاب کرتے ہو ئے ممبر صوبائی اسمبلی بی بی فوزیہ نے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت نے لوگوں کو بنیادی سہو لیات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ اداروں کو مستحکم کرنے کے لئے انقلابی اقدامات کئے ہیں جن میں تعلیمی نظام میں بہتری ، صحت کی سہو لیات کی فراہمی اور میرٹ کی پاسداری سر فہرست ہے انہوں نے کہاکہ باوجود کہ تحریک انصاف کو کوئی منتخب نمائندہ چترال سے نہیں ملا لیکن پھر بھی صوبائی حکومت نے چترال کی تعمیر و ترقی میں پچھلی تمام حکومتوں کے ریکارڈ توڑ دیئے چترال میں خواتین کے لئے ڈگری کالج کا قیام ، یونیورسٹی آف چترال ، ریسکیو 1122ایسے اقدامات ہیں جن کی تاریخ میں نظیر نہیں ملتی انہوں نے کہاکہ گزشتہ سال سیلابوں کی وجہ سے انفراسٹرکچر کو پہنچنے والے نقصانات کے ازالے کے لئے ایک ارب روپے کا پیکج بھی صوبائی حکومت کی طرف سے دیا گیا جس سے 9آر سی سی پلوں کی تعمیراور اتنی ہی تعداد میں رابطوں سڑکوں کی مرمت کا کام شروع ہو چکا ہے ۔

 


شیئر کریں: