Chitral Times

Jul 24, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

کسی کو دوسری یا چوتھی بار وزیراعظم بنانے سے بہتر ہے عوام مجھے موقع دیں، بلاول

شیئر کریں:

کسی کو دوسری یا چوتھی بار وزیراعظم بنانے سے بہتر ہے عوام مجھے موقع دیں، بلاول

ایبٹ آباد( چترال ٹائمزرپورٹ )پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کسی کو دوسری یا چوتھی بار وزیراعظم بنانے سے بہتر ہے عوام مجھے ایک بار موقع دیں مایوس نہیں کروں گا۔ایبٹ آباد میں پیپلز پارٹی کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں ں ے کہا کہ پیپلز پارٹی محروم طبقوں کی جماعت ہے اس جماعت کا تعلق عوام کی تین نسلوں سے ہے، آصف زرداری نے اپنے دور میں جو کام کیے وہ آپ کے سامنے ہیں، آصف زرداری نے خیبر پختون خوا کو شناخت دی، بی آئی ایس پی کے ذریعے عوام کی مدد کی۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پاکستان میں مہنگائی اور غربت تاریخی سطح پر ہیں، سیات دان، بیورو کریسی اور حکومت کو زمینی حقائق کا اندازہ نہیں ہے انتہائی تیزی کے ساتھ مہنگائی اور غربت بڑھ رہی ہے، پرانی جماعتیں پرانی سیاست میں لگی رہتی ہیں ان مسائل سے نکلنا ہے تو نئی سیاست کی طرف بڑھنا ہوگا، نوجوانوں کو آگے آنا ہوگا، ایک نئی سیاست اور ایک نئی قیادت کی ضرورت ہے، ا?ج اور کل کے مسائل کا حل پیپلز پارٹی کے منشور میں ہے۔انہوں ں ے کہا کہ کسی کو دوسری یا چوتھی بار وزیراعظم بنانے سے بہتر ہے آپ مجھے موقع دیں، عوام ایک بار موقع دیں مایوس نہیں کروں گا، پیپلز پارٹی کی مخالف کوئی ن لیگ یا پی ٹی آئی نہیں، اس کی مخالف مہنگائی، بے روزگاری اور غربت سے ہے، ہمیں سوچنا ہوگا کہ کیا 70 سالہ بابوں کے ہاتھ میں ملک کی حکومت دے دیں؟ ملکی مسائل حل کرنا اور عوام کی خدمت کوئی مشکل نہیں بس نیت ٹھیک ہونی چاہیے، ایک نظریہ ایک منشور ہونا چاہیے۔چیئرمین پی پی نے کہا کہ ہمارے پاس مہنگائی اور غربت کو روکنے کا منصوبہ ہے جس کے لیے تمام جماعتوں کو ہمارے ساتھ مل کر چلنا ہوگا۔

 

 

حکومتی اخراجات اور توانائی کی قیمت کم کریں گے، وزیر خزانہ

کراچی(سی ایم لنکس)نگراں وفاقی وزیر خزانہ نے کہا ہے کہ حکومت کے اخراجات اور توانائی کی قیمت کو کم کیا جائے گا۔دی فیچر سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے نگراں وفاقی وزیر خزانہ شمشاد اختر نے کہا کہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے معاہدے کے تحت توانائی کی قیمت کم کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اسٹیٹ بینک کے زرمبادلہ ذخائر 4 ارب سے بڑھ 7 ارب ڈالر سے تجاوز کرچکے ہیں۔ نگراں حکومت کا کام معیشت میں استحکام لانا اور آئی ایم ایف پروگرام پر عمل کرانا تھا۔ اس پروگرام پر عمل کے بعد آئی ایم ایف سے 7 ارب ڈالر کا پروگرام لینا ہے۔وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اپنے زرمبادلہ ذخائر کو مستحکم کررہا ہے جس سے سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھتا ہے۔ آئی ایم ایف سے اسٹاف کی سطح پر ہونے والے مذاکرات میں مالیاتی نظم و نسق پر اتفاق ہوا ہے۔ حکومت کے اخراجات میں کمی کرنا اور توانائی کی قیمت کو کم کرنا ہے۔کانفرنس سے خطاب میں نگراں وفاقی وزیر نے کہا کہ آئی ایم ایف سے مزید 700 ملین کی فراہمی کا اسٹاف لیول معاہدہ بھی ہوا ہے۔ توانائی کے شعبے میں بہتری اور اخراجات میں کمی کے حوالے سے پالیسی لارہے ہیں۔ سرمایہ کاری کے حصول اور مزید نوکریوں کی فراہمی کے لیے بھی کوششیں کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدے سے معیشت درست سمت کی جانب گامزن ہو گی۔ پاکستان کے پاس خطے اور ایشیا میں ایک معاشی طاقت بن کر ابھرنے کی مکمل صلاحیت ہے۔ عالمی بینک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کی معیشت 2047ء میں 2 ٹریلین تک پہنچ سکتی ہے۔ معیشت کو بہتر کرنے کے لیے مثبت معاشی پالیسیاں بنانے کی ضرورت ہے۔شمشاد اختر کا مزید کہنا تھا کہ نگراں حکومت ٹیکس حصول بہتر بنانے کے لیے کاوشیں کررہی ہے۔ اس سلسلے میں ایف بی آر کے نظام میں بہتری کے لیے اقدامات کیے گئے ہیں۔ ٹیکس بیس کو بڑھانے کے لیے جدید ڈیجیٹل ٹیکنالوجی نافذ کررہے ہیں، جس سے ٹیکس وصولیوں میں اضافہ ہو گا۔ ٹیکنالوجی کے استعمال سے ٹیکس چوروں اور نان فائلرز کی نشاندہی آسان ہوجائے گی۔


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
81771