Chitral Times

Jul 18, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

تنخواہوں میں کسی قسم کی کٹوتی نہیں کی جا رہی، نگران صوبائی وزیر خزانہ

Posted on
شیئر کریں:

تنخواہوں میں کسی قسم کی کٹوتی نہیں کی جا رہی، نگران صوبائی وزیر خزانہ

پشاور( چترال ٹائمزرپورٹ)صوبے کو مالی مشکلات کا سامنا ہے لیکن اس کے باوجود سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں کسی قسم کی کوئی کٹوتی نہیں کی جا رہی۔خیبر پختونخوا کے نگراں وزیر خزانہ احمد رسول بنگش کا کہنا تھا تنخواہوں میں کٹوتی کی خبریں محض افواہ ہیں، ان کا کہنا تھا کہ وفاق کے ذمہ گزشتہ مالی سال کے 233 ارب روپے واجب الادا ہیں۔نگراں وزیر اعظم نے صوبے کے بقایا جات کی ادائیگی کا یقین دلایا ہے، ان کا کہنا تھا کہ تنخواہوں میں کسی قسم کی کوئی کٹوتی نہیں کی جا رہی، یہ بات غیر رسمی طور پر زیر بحث آئی تھی۔

 

پی آئی اے اور پی ایس او میں معاملات طے، پروازیں جلد معمول پر آنے کا امکان

کراچی(سی ایم لنکس)پی آئی اے اور پی ایس او کے درمیان معاملات طے پا گئے، جس کے نتیجے میں پروازیں جلد معمول پر آنے کا امکان ہے۔ذرائع کے مطابق ایندھن اور ادائیگیوں کے حوالے سے قومی فضائی کمپنی پی آئی اے اور پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او) کے درمیان معاملات طے ہو گئے، جس کے بعد اگلے چند روز میں قومی ائرلائن کو ایندھن کی فراہمی بتدریج بڑھنا شروع ہو جائے گی، جس سے متاثرہ پروازوں کا شیڈول معمول پر آنا شروع ہو جائیگ ا۔ترجمان پی آئی اے کے مطابق پی ایس او نے قومی ائرلائن کی مالی مشکلات کے پیش نظر کریڈٹ کی سہولت میں توسیع کردی ہے۔ پی ایس او نے پی آئی اے کی قرضوں کی حد میں 50 کروڑ روپے کا اضافہ کردیا۔ پی ایس او ذرائع کا کہنا ہے کہ پی آئی اے اپنی 15 ارب روپے کی قرضوں کی حد پہلے ہی پوری کر چکا ہے۔27 اکتوبر کو دونوں جانب سے حکام کے درمیان مذاکرات میں کریڈٹ کی حد بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا۔دوسری جانب مالی اور ایندھن بحران کی وجہ سے پی آئی اے کا شیڈول تاحال شدید متاثر ہے، جس کی وجہ سے ملکی و غیر ملکی مزید 59 پروازیں منسوخ ہو گئی ہیں۔ قومی ائرلائن کے مالی بحران سے جڑے ایندھن کے مسئلے کو 2ہفتے سیزائد ہوگئے، جس کے نتیجے میں گزشتہ 17 روز کے دوران 597پروازیں اڑان نہیں بھر سکیں۔واضح رہے کہ پی آئی اے انتظامیہ نے جمعہ کی سہ پہر پی ایس او کو 10 کروڑ روپے کی ادائیگی کی ہے۔ تیل کی مذکورہ نقد ادائیگی کے ساتھ ایندھن کے لیے 8 پروازوں کی فہرست پی ایس او کو ارسال کردی گئی ہے۔ آج ہفتہ(آدھا دن)اور کل(اتوار) کو قبل ازوقت ادائیگیاں نہ ہونے کے سبب گزشتہ اتوار جیسی صورتحال پیدا ہوسکتی ہے۔گزشتہ اتوار قبل ازوقت ادائیگی کے فقدان اور تعطیل کے سبب کووڈ 19 کے بعد پہلی مرتبہ پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن منجمد رہا تھا۔ پی آئی اے کا یومیہ اندرون و بیرون ملک فلائٹ آپریشن 81 پروازوں پر مشتمل ہے۔ ذرائع کے مطابق ای سی سی کی جانب سے کل رات کو 8 ارب روپے ملنے کے بعد پروازوں کی روانگی کے پیچیدہ مسئلے میں بہتری آنے کے امکانات ہیں۔


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
80944